DOWNLOAD OUR APP
IndiaOnline playstore
03:36 PM | Fri, 30 Sep 2016

Download Our Mobile App

Download Font

غلام علی کے بعد ’خورشید قصوری کی کتاب کی رونمائی منسوخ کرو‘

354 Days ago

151012045637_sudheendra_kulkarni

پاکستان کے غزل گلوکار غلام علی کے کنسرٹ کی مخالفت کے بعد شیوسینا نے پاکستان کے سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوري کی کتاب کی رونمائی سے متعلق ممبئی میں ہونے والے پروگرام کی بھی مخالفت کرنے کا اعلان کیا ہے۔پیر کی صبح شیو سینا کے کارکنوں نے کتاب کی رونمائی کے لیے ممبئی میں پروگرام منعقد کرنے والے ادارہ ’آبذرور ریسرچ فاؤنڈیشن‘ کے سربراہ سندھیندر کلکرنی کو ان کی کار سے اتار کر ان کے چہرے پر سیاہ رنگ لگا دیا۔اس واقعے کے بعد مسٹر کلکرنی اور محمود قصوری نے ممبئی میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس کی اور کہا کہ ان کا شام کا پروگرام طے شدہ وقت کے مطابق ہوگا۔سدھیندر کلکرنی کا کہنا تھا ’یہ بھارتی ثقافت، جمہوریت اور آئین کی مخالفت ہے۔۔۔۔۔۔ہم اس طرح کی حرکتوں سے ڈرنے والے نہیں ہیں اور ہم پروگرام طے شدہ وقت کے مطابق کریں گے۔‘قصوری نے اس واقعے پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس سے تکلیف ہوئی۔ ان کا کہنا تھا کہ احتجاج کا حق سبھی کو حاصل ہے لیکن یہ پر امن طریقے سے ہونا چاہیے۔شیوسینا نے پاکستان پر انتہا پسندوں کا حامی ہونے کا الزام لگاتے ہوئے اس پروگرام کے منتظمین سے کہا تھا کہ اگر قصوري کا پروگرام منسوخ نہیں کیا گیا تو وہ اس کی مخالفت کریں گے۔ اس سے قبل ایک نجی ٹی وی چينل این ڈی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے پروگرام کا اہتمام کرنے والے سدھیندر کلکرنی نے کہا تھا کہ اس کے لیے حفاظتی انتظامات پوری طرح سے مکمل کر لیے گئے ہیں اور پروگرام پہلے سے مقرر منصوبے کے تحت ہوگا۔انہوں نے این ڈی ٹی وی کو بتایا تھا: ’یہ کھلی زبردستی کی مخالفت ہے۔ ان کا ایک خط کہتا ہے کہ وہ شیوسینا کے طرز پر پروگرام میں رکاوٹ ڈالیں گے ۔۔۔ انہیں یہ حق کس نے دیا ہے۔‘بھارتی خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق شیوسینا کے رکن آشیش چیمبوركر نے نہرو پلینیٹیريم، جہاں پروگرام طے ہے، کے ڈائریکٹر کو قصوري کا پروگرام منسوخ کرنے کے لیے خط لکھا ہے۔خبر رساں ادارے اے این آئی کے مطابق شیوسینا کے لیڈر سنجے راؤت نے کہا ہے کہ اگر خورشید محمود قصوري پاکستان کی جانب سے جنگ میں مارے گئے بھارتی فوجیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں تو شیو سینا انہیں پروگرام کرنے دینے کے بارے میں سوچ سکتی ہے۔قسوري کی کتاب ’نيدر اے ہاک نور اے ڈو: این انسائڈرز اکاؤنٹ آف پاكستانز فارین پالیسی‘ کی 12 اکتوبر کو ممبئی میں رونمائی ہونی ہے۔پروگرام کے آرگنائزر ’آبذرور ریسرچ فاؤنڈیشن‘ نے اس پروگرام کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے مہاراشٹر کے وزیر اعلی دیویندر فنڈویس کو خط لکھا ہے۔چند روز پہلے ہی کی بات ہے شیوسینا کی مخالفت کی وجہ سے ممبئی میں پاکستانی غزل گلوکار غلام علی کا پروگرام منسوخ کر دیا گیا تھا۔اس کے بعد انہیں ریاست یو پی اور دلی سے پروگرام کرنے کی دعوت ملی جس کے لیے خصوصی پروگرام منعقد کیے جائیں گے۔

()

Viewed 253 times
  • SHARE THIS
  • TWEET THIS
  • SHARE THIS
  • E-mail

Our Media Partners

app banner

REVOLUTIONARY ONE-STOP ALL-IN-1 MARKETING & BUSINESS SOLUTIONS

  • Digital Marketing
  • Website Designing
  • SMS Marketing
  • Catalogue Designing & Distribution
  • Branding
  • Offers Promotions
  • Manpower Hiring
  • Dealers
    Retail Shops
    Online Sellers

  • Distributors
    Wholesalers
    Manufacturers

  • Hotels
    Restaurants
    Entertainment

  • Doctors
    Chemists
    Hospitals

  • Agencies
    Brokers
    Consultants

  • Coaching Centres
    Hobby Classes
    Institutes

  • All types of
    Small & Medium
    Businesses

  • All types of
    Service
    Providers

FIND OUT MORE