Promote your Business

مرکزی بجٹ 2020 سے پانچ کھرب ڈالر کی معیشت حاصل کرنے میں مدد ملے گی: وزیراعظم۔

news

وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا ہے کہ پچھلے آٹھ مہینے میںNDA حکومت کی جانب سے کیے گئے فیصلوں کی سینچری بن پاناایک بے مثال کام ہے۔ نئی دلی میں ایک پرائیویٹ ٹی وی چینل کی جانب سے منعقدہ انڈیاایکشن پلان 2020 سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے زور دے کر کہا کہ اب ملک وقت ضائع کیےبغیر پورے اعتماد کے ساتھ آگے بڑھے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ بیکوقت تین طلاق کے طریقہکار کو ختم کرنا، دفعہ 370 کو منسوخ کرنا، چھوٹے کاروباری افراد کو پنشن اسکیم کے دائرےمیں لانا اور بوڈو امن معاہدے پر دستخط کرنا اہم فیصلوںمیں شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت میں پانچ کھرب ڈالر کی معیشت بننےکا نشانہ طے کیا ہے اور حکومت نے اسے حاصل کرنے کے لیے بہت سے اقدامات کیے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ مرکزی بجٹ اِس نشانے کو حاصل کرنے میں مدد دے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملککو تین کھرب ڈالر کے نشانے تک پہنچنے میں 70 سال لگے۔ وزیراعظم نے تاکید کی کہ مشکلنشانے طے کرنا اور انہیں حاصل کرنے کی کوشش کرنا بے سمت رہنے سے زیادہ بہتر ہے۔

انکم ٹیکس کے بارے میں وزیرعظم نے کہا کہ تمام حکومتیں ٹیکسنظام کو چھوتے ہوئے ہچکچاہٹ محسوس کرتی رہیں لیکن اب موجودہ حکومت نے ٹیکس نظام کوشہری مرکوز بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی کے لیے انکم ٹیکس ضروری ہے اور لوگوںپر زور دیا کہ وہ اس سلسلے میں اپنا محاسبہ کریں۔ جناب مودی نے کہاکہ بھارت ایسے بہتہی کم ملکوں میں سے ایک ہے جہاں ٹیکس ادائیگی کا شفاف چارٹر ہے جو ٹیکس دہندگان کےحقوق کو صحیح صحیح بیان کرتا ہے۔ انہوں نے یہ یقین بھی دلایا کہ ٹیکس کے لیے حراساںکیا جانا اب ایک ماضی کی بات ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ کسی حکومت نے اقتصادی ترقی کو فروغدینے کے لیے چھوٹے شہروں پر توجہ کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں اقتصادی سرگرمیکے مراکز ٹائر ٹو اور ٹائر تھری شہر ہیں، جہاں غریب اور متوسط طبقے کے افراد کی تعدادزیادہ ہے۔ اب یہ ایسے مراکز ہیں جہاں زیادہ سے زیادہ ڈیجیٹل لین دین ہو رہا ہے۔ (AIR NEWS)

48 Days ago

Download Our Free App